ویب کے لیے لکھنا

 

روب لڈل، بی بی سی توجہ حاصل کریں

ویب سائٹ کے قاری کو مرضی کی معلومات نہیں ملتیں تو وہ آگے بڑھ جاتا ہے ممکنہ طور پر کسی اور ویب سائٹ پر۔ لہٰذا خبر کےشروع ہی میں اسے وہ دے دیں جو وہ چاہتا ہے۔ سوچیں کہ ایک انتہائی پرشور پر ہجوم جگہ میں آپ کسی کو اپنی خبر کیسے سنائیں گے۔ آپ اپنی خبر کے لیے کونسا جملہ استعمال کریں گے؟ اکثر آپ کی خبر کا پہلا پیراگراف وہی ہوتا ہے۔

اچھی شہ سرخیاں

قاری پہلا صفحہ دیکھتے ہیں اور ایک اچھی شہ سرخی انہیں بتا دیتی ہے کہ خبر کس بارے میں ہے، لہٰذا وہ مایوس نہیں ہوں گے اگر وہ خبر پر کلک کریں اور وہ کسی ایسی چیز کے بارے میں ہو جس کی وہ توقع نہیں کر رہے تھے تو انہیں مایوسی ہو سکتی۔

خبر کو مختصر رکھیں

اخبار کی نسبت کمپیوٹر کی سکرین یا موبائل فون پر خبریں پڑھنا آسان نہیں ہوتا۔ اکثر آپ کو پس منظرشامل کرنے کی ضرورت نہیں ہوتی۔ وہ پہلے ہی لکھی گئی خبروں میں موجود ہوتا ہے اور اگر قاری کو وہ معلومات درکار ہوں تو ہم اسے  ان کی جانب بھیج سکتے ہیں۔ اگر آپ کی خبر میں پیچیدگیاں ہوں تو اسے مختلف حصوں میں تقسیم کرنے کا سوچیں،  تاکہ قاری آسانی سے پڑھ سکے۔

خبر میں جان ڈالیں

کسی اور میڈیا میں آپ لوگوں کو دیکھ اور سن سکتے ہیں۔ الفاظ کے ساتھ ذرا مختلف ہوتا ہے۔ آپ کو الفاظ کو ایسے انداز میں استعمال کرنا ہے جس سے ان میں جان پڑ جائے۔ اس لیے کچھ ایسے رنگین جملے اپنی خبر میں شامل کرنے سے نہ گھبرائیں جن سے موضوع کے بارے میں وضاحت ہو سکتی ہو۔

اپنی خبر دوبارہ لکھیں

ہمیں عوام سے رابطہ کرنا ہے اور اپنا مدعا جس قدر ممکن ہو صاف صاف بتانا ہے۔ اگر وقت ہو تو ہر خبر کو دوبارہ لکھ کر بہتر کیا جا سکتا ہے اور اس خیال میں نہ رہیں کہ ہجے اور قواعد کی غلطیاں اشاعت سے پہلے نکال دی جائیں گی۔ قارئین اس بات سے نفرت کرتے ہیں جب ہم بنیادی چیزیں ٹھیک نہ کر سکیں۔ یاد رکھیں کہ وہ غلطی کو بہت جلد پکڑ لیتے ہیں۔

خبر کی وضع قطع

خبر کے لکھاری کی حیثیت سے اس بات کا امکان ہے کہ آپ اس بات کا فیصلہ کریں کہ ویب پیج پر آپ کی خبر کیسی لگے گی۔ ممکن ہے آپ بہت اچھی خبر لکھیں مگر اگر وہ صرف الفاظ کا ایک جتھہ لگے گی تو ممکن ہے لوگ اسے نہ پڑھیں۔ اس لیے تصاویر کا استعمال کریں، اقتباسات یا حقائق پر مبنی باکس بنائیں۔

مختلف میڈیا کا استعمال

کیا آپ کی خبر ایک ہزار سے کم الفاظ میں بیان نہیں ہو سکتی؟ یہ ممکن ہے کہ تصاویر، ویڈیو یا آڈیو یہ کام بہتر کر لیں۔ اگر خبر کی نوعیت ایسی ہے تو یہ ممکن ہے کہ اسے آڈیو کے سلائیڈ شو سے مزین کیا جا سکتا ہو۔ ویب کا سب سے بڑا فائدہ یہی ہے کہ یہ میڈیا کو جوڑ کر خبر بتاتا ہے۔

اچھی خبروں کا تجزیہ

دیکھیں کہ بی بی سی کی خبروں کی ویب سائٹ، بی بی سی نیوز، اور دیگر نے کسی خبر کو کیسے پیش کیا ہے۔  کوئی ایسی خبر ڈھونڈیں جو آپ کے خیال میں مقبول ہوئی ہو اور تجزیہ کریں کہ وہ مقبول کیوں ہوئی۔ نوٹس بنائیں کہ قارئین ویب سائٹس میں کیا دیکھ رہے ہیں، کیا مقبول ہے اور کیا نہیں۔ آپ اس تجزیے سے کئی اسباق سیکھ سکتے ہیں۔